Loading...
Read Article

Coronavirus Poetry

Notification Image

دعائے خیر  

 قسمت میں عمر بھر کا رونا نہ ہو جائے

ڈاکٹروں کے ہاتھ انسان کھلونا نہ ہو جائے

عشاق نے تو خیر سماجی فاصلہ نہیں رکھنا

دعا کرو کسی معشوق کو کرونا نہ ہو جائے۔


جیسے تھے

 عشق کی اندھیری راہ میں بونا نکل آیا

میرا تو ساری عمر کا رونا نکل آیا

برسوں کی سماجت سے وہ بیاہ پر ہوئے راضی

پھر کیا ہوا؟ معشوق کو کرونا نکل آیا


لاک ڈاؤن

اب تو ماسک ہی اوڑھنا بچھونا ہو گیا ہے

اس کے غم میں میرا سر بھی کونا ہو گیا ہے

وہ ٹین کئی دنوں سے قرنطین ہے گھر میں

سنا ہے کہ اس کو بھی کرونا ہو گیا ہے۔


(منذر منعم گھرتلوی)



Articles List